Artical

ہر دعا قبول ہوگی ،اللہ کو اس نام کے ساتھ پکارا کرو

Written by admin

آج امت کو نجانے کیا ہوگیا اس کو اپنے رب کے ناموں کا بھی خیال نہ رہا وہ جس طرح میرے بھائیو اللہ کی ذات یکتا ہے وہ اپنے ناموں کے اعتبار سے بھی یکتا ہے اس جیسے کوئی نام نہیں ہیں اور نام بھی وہی بولنے چاہئیں جو اللہ ذوالجلال نے قرآن میں نازل فرمادیئے جو اپنے پیغمبر کو سکھا دیئے ہم دعا کرتے ہیں

اسئلک بکل اسم ھو لکَ اللہ میں تجھ سے مانگتا ہوں تیرے ناموں کے ساتھ جو تیرے نام ہیں میرے مالک جو تونے خود اپنے نام چنے ہیں یا تو نے اپنی کتاب میں اتار دیئے ہیں یا تونے اپنے پیغمبروں کو سکھا دیئے ہیں اللہ جو تونے نام اپنے پاس رکھے ہیں میں ان ناموں کے ذریعے تجھ سے مانگتا ہوں میری اس ضرورت کو پورا فرما دے ۔

اللہ کا غضب اللہ کا ق ہ ر ان لوگوں پر پڑا جن لوگوں نے اللہ ذوالجلال کے بارے میں تو سوچا نہیں ہے اپنے بتوں کے نام ایسے رکھ دیئے ان میں جھگڑنے لگ گئے مشرقوں نے بھی ایسا کیا اس کو پوجنے لگ گئے اور آج طرح طرح کے نام دنیا میں موجود ہے

اس نام سے لوگ پوجا کررہے ہیں پکاررہے ہیں اللہ کے نام وہی ہیں جو قرآ ن میں آگئے ہیں جو لوگ بتوں کے ناموں میں جھگڑے پر تیار ہین ان کو اللہ کے نام سے پیار نہیں رہا ان کو اللہ کی ذات سے پیار نہیں رہا ایسے پر اللہ کا غضب ہی ہوگا ق ہ ر ہی ہوگا اللہ انہیں کیسے پسند کرے گا اب دنیا میں سوچئے کہ جو کسی کا نام سننا پسند نہیں کرتا اس سے کبھی محبت ہوئی ہے جو اللہ کے ناموں کوہی پسند نہیں کرتا

آپ کوشش کیا کریں اپنی زبان پر خدا کا لفظ نہ لایا کریں کیونکہ خدا جو ہے اس کی جمع خداؤں بھی آتا ہے اللہ کا لفظ ایسا ہے کہ نہ اس کا تثنیہ ہے اور نہ اس کا جمع ہے یہ صرف اللہ کے لئے ہے دنیا میں بھی جتنے بادشاہ اور جتنے دعوے دار آئے کسی نے اپنے آپ کو اللہ نہیں کہا یہ واحد لفظ ہے

عربی زبان میں بھی کہ یہ کسی کی طرف نسبت نہیں ہوتا ہر چیز کی نسبت اللہ کی طرف تو ہوتی ہے بیت اللہ عبداللہ ناقۃ اللہ لیکن لفظ اللہ کی نسبت کسی کی طرف نہیں ہوتی یہ استعمال ہی نہیں ہوا عربی لغت میں ۔ اپنے اعمال پر توجہ دیجئے حقوق العباد لازمی پورے کیجئے اور حقوق اللہ کا بھی خیال رکھئے

کیونکہ اللہ کبھی حقوق کے تلف کرنے والے کو پسند نہیں فرماتا قیامت کے دن اللہ اپنے حقوق تو معاف فرمادے گامگر حقوق العباد یعنی اللہ کی مخلوق کے حقوق جو آپ نے ادا نہیں کئے ہوں گے ان کو معاف نہیں فرمائے گا ان پر آپ کو سزاد دی جائے گی اور آپ کی نیکیوں سے ان حقوق کو ادا کیا جائے گا ۔ اللہ ہم سب کا حامی و ناصر ہو۔آمین

Leave a Comment