Artical

غسل کرتے وقت کیا غلطی کرتی ہیں؟

Written by admin

غسل میں عورت کن باتوں کا خیال رکهے سوال: فرض غسل میں عورت کن باتوں کا خاص اہتما م کرے ؟ جواب : فرض غسل میں عورت درج ذیل باتوں کا خاص اہتمام کرے . 1 .غسل طریقہ یہ ہے کہ پہلے ہاتھ دھوئے اور استنجاء کرے پھر بدن پر کسی جگہ نجاست لگی ہو. اسے دھوڈالے . پھر وضو کر لے . 2. غسل میں تین چیزیں فرض ہیں . 1

.کلی کرنا 2.ناک میں پانی ڈالنا 3، پورے بدن پر پانی بہانا 3. بیٹھ کر نہائیں اس میں پردہ غسل میں عورت کو کس چیز کا خاص خیال رکھنا چاہئے؟ جواب: واجب غسل میں عورت کو مندرجہ ذیل چیزوں کا خاص خیال رکھنا چاہئے۔- غسل کا طریقہ یہ ہے کہ پہلے اپنے ہاتھ دھوئے اور استنجاء کرے اور پھر اگر جسم پر کہیں نجاست ہو۔ اسے دھوئے پھر وضو کریں۔ g- غسل میں تین چیزیں واجب ہیں۔ 1. کلی کرنا 2. ناک میں پانی ڈالنا 3 ، پورے جسم میں پانی ڈالنا 3. بیٹھ کر غسل کریں۔

اس میں اور بھی پردہ پڑتا ہے۔ If: اگر سر کے بال ڈھیلے ہوں تو پھر اس کے بعد تمام بالوں کو بھیگنا اور پانی کو جڑوں تک پہنچانا واجب ہے۔ اگر ایک بال بھی خشک رہے تو غسل نہیں ہوگا۔ 5. بالیاں ، بجتی ہیں۔ اور اگر حلقے تنگ ہوں تو انہیں اچھی طرح ہلائیں تاکہ پانی سوراخوں تک پہنچ جائے۔ زیادہ ہے . 4. اگر سر کے بال کھلے ہوں تو سب بالوں کو بھگونا اور جڑوں میں پانی پہنچانا فرض ہے ایک بال بھی سوکھا رہ گیا تو غسل نہ ہوگا۔

.5. نتھ ،بالیوں ، انگوٹھی . اور چھلوں کو تنگ ہونے کی صورت میں خوب ہلائیں تاکہ پانی سوراخوں میں پہنچ جائے . 6.اگر بالیاں نہ پہنی ہوں تو احتیاطا سوراخوں میں پانی ڈال لے . 7.اگر بالوں میں گوند افشان لگی ہو تو دھو ڈالے کیونکہ بالوں کی جڑوں میں پانی پہنچانا واجب ہے ورنہ غسل نہ ہوگا . 8.اگر ناخن وغیرہ میں آٹا لگ کر سوکھ گیا تو پہلے صاف کرے ورنہ غسل نہ ہوگا . 9.اگر ناخنوں میں نیل پالش لگی ہو تو صاف کرے کیونکہ یہ بدن تک پانی بیچنے نہیں دیتی .ورنہ غسل نہ ہوگا.

Leave a Comment